BA English

The Killers by Earnest Hemingway BA English Notes

The Killer is an interesting story written by Earnest Hemingway. This story is the part of BA English Syllabus. The Pakistani universities mostly ask question about the story in the examination. The purpose of writing this post is to provide BA English Short Stories Notes. The story is the criticism on the society of America. It has been said that the law and force situation is outstanding in America but this story tells that two men want to kill an innocent person just to make their friend happy.  The two killer enter in the henry’s restaurant with the mind to kill Ole Anderson. They wait for him but he didn’t come to the restaurant fortunately. The killers frightened the crew of the restaurant, they order to eat something in very bad manner. This is how story goes one. We have classified our post to character of the story, important points, explanation in Urdu and expected question answer.

CHARACTERS OF STORY

1 Al and Max Killers
2 Ole Anderson Professional retired boxer
3 George Waiter in Henry’s Lunch Room
4 Nick Adams Counterman
Sam Cook

SUMMARY OF STORY

  1. Al and Max are two professional killers.
  2. They want to kill Ole Anderson. They enter in the Henry’s Lunch Room (Restaurant).
  3. They place order to George in a very vulgar manner.
  4. They are waiting for Anderson who is professional retired heavy weight boxer as they want to kin him.
  5. They make hostage of the crew of restaurant at gun point and they tie Nick Adams and Sam back to back thrusting towels in their mouths in the kitchen of the restaurant.
  6. They crew asked why they are doing these activities, in response the Al and Max tell that they want to kill Anderson bust because they want to oblige their friend. Their friend was also a boxing champion and during a match he was beaten by the Anderson, therefore Al and Max want to kill him to give surprise their friend.
  7. After their long wait they left the place as Anderson doesn’t in the restaurant. They moved from there however left shadow of death.
  8. Dye to fear, the crew of the hotel decided to leave the job and even that place.
  9. George goes to kitchen and un-ties Sam and Nick Adams.
  10. After that Nick Adams decided to intimate Anderson about this incident. When Nick tells to Anderson, he doesn’t bother and remains calm. Nick says we should inform to police however, Anderson says that there is no use of it.

مختصر تعارف

اس کہانی میں ہمیں دو پیشہ ور قاتلوں کے متعلق بتایا گیا ہے۔ جو ایک سویڈیش باکسر آل اینڈرسن کو قتل کرنا چاہتے ہیں۔ ان قاتلوں کے نام آل اور میکس ہیں وہ اپنے ایک دوست کو خوش کرنے کے لیے اسے قتل کرنا چاہتے ہیں۔ انہیں پتہ چلتا ہے کہ ان کا شکار آل ایںڈرسن عام طور پر شام کا کھانا “ہنری کے لنچ روم” میں آ کر کرتا ہے۔ یہ ہوٹل شگاگو کی ریاست کے ایک قصبے میں واقع ہے۔ اس لئے وہ شام کو پانچ بجے وہاں پہنچ جاتے ہیں۔

قاتلوں کی ہوٹل آمد

دونوں جسامت اور شکل و شبہات کے لحاظ سے ایک دوسرے سے ملتے جلتے ہیں۔ دونوں نے دستانے اور جست لباس پہنے ہوئے ہیں۔ دونوں ہوٹل میں داخل ہو کر کاونٹر والی میز کی ایک جانب بیٹھ جاتے ہیں۔ کاونٹر کلرک ںک آڈم کاونٹر کے دوسرے سرے پر موجود ہے۔ انہیں اس بات پر بہت مایوسی ہوتی ہے کہ ان کا شکار اس دن وہاں نہیں آتا۔

ہوٹل کے عملہ سے سلوک

وہ ہوٹل کے ویٹر جارج اور ملازم نک اورخبشی نسل باورچی کے ساتھ نہایت ہی سفاکانہ سلوک کرتے ہیں۔ نک اور باورچی سام کو باورچی خانے میں جا کر بند کر دیتے ہیں۔ ان  کے منہ پر کپڑاٹھونس دیتے ہیں۔ جارج کو ہدایت کی جاتی ہے کہ وہ اس دوران کسی گاہگ کو وہاں مت آنے دیں۔ ان کی اس کاروائی کا مطلب دہشت اور خوف کا ماحول پیدا کرنا ہے۔ جب وہ ہوٹل سے باہر چلے جاتے ہیں تو کافی دیر تک ملازم دہشت زدہ ماحول میں بے حس و حرکت کھڑے رہتے ہیں۔

آل ایںڈرسن کا رد عمل

قاتلوں کے چلے جانے کے بعد جارج باورچی خانے میں جاتا ہے اور نک اور باورچی سام کو آزاد کرتا ہے دونوں بہت خوفزدہ ہیں۔ جارج انہیں بتاتا ہے کہ وہ دونوں پیشہ ور قاتل ہیں اور وہ سویڈیش باکسر آل آینڈرسن کو قتل کرنا چاہتے ہیں۔ نک اور جارج محسوس کرتے ہیں کہ انہیں آل اینڈرسن کو قاتلوں کے منصوبے سے آگاہ کرتا ہے۔ لیکن اینڈرسن اس بات کا کوئی اثر نہیں لیتا۔ نک قاتلوں کے بارے میں تفصیل سے بتاتا ہے  لیکن آل اینڈرسن اس بات کی طرف کوئی توجہ نہیں دیتا۔ نک اس مشورہ دیتا ہے کہ وہ جان بچانے کے لیے کچھ کرے۔ لیکن اینڈرسن اسے بتاتا ہے کہ وہ ساری عمر جان بچانے کے لیے دوڑ دھوپ کرتا رہا ہے۔ اب وہ جان بچانے کی کوشش نہیں کرنا چاہتا۔ اس کہانی کے مصنف نے قتل کے جرم کا ارتکاب بیان کرنے کی بجائے اس کے لیے کی جانے والی تیاری کو بیان کیا۔ اس طرح اس نے کہانی کو پرسرار بنایا ہے اور اس میں خوف اور تجسس کے جذبات کو پیدا کیا ہے۔  

EXPECTED QUESTIONS

  1. A story of horror and suspense.
  2. Story of criticism on American Society.
  3. Failure of law enforcing agencies.
  4. What is a code hero?
  5. How did the killers frighten the crew of restaurant.
  6. Character sketch of Ole Anderson.

Tags

Ruqia

Well! This is Ruqia living in Lahore, Pakistan. I am very glad to inform my valuable users visiting my website that I am a blogger. My ambition to work online is to facilitate the people of my community. As far as my hobbies are concerned, I love to play Badminton, Swimming and obviously watching cricket. My passion is to connect with good people around the world.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close